اگلی بار

ایک پروگرام کے دوران یمن سے ایک سائل نے ٹیلی فون کر کے پوچھا ‘ شیخ صاحب میرے موبائل میں قرآن شریف کی بہت سی تلاوت بھری ہوئی ہے‘ کیا میں موبائل کے ساتھ بیت الخلاءمیں جا سکتا ہوں‘ شیخ صاحب نے جواب دیا ہاں جا سکتے ہیں‘ کوئی حرج نہیں‘ سائل نے سوال دوہرایا‘ شیخ صاحب ‘ میں موبائل میں قرآن شریف کے بھرے ہونے کی بات کررہا ہوں۔شیخ صاحب نے مسکرائے اور جواب دیا ‘ میرے بھائی کوئی حرج نہیں‘ قرآن شریف موبائل کے

میموری کارڈ میں ہو گا تم اسے ساتھ لے کر بیت الخلاءمیں جا سکتے ہو۔ سائل کہنے لگا لیکن شیخ صاحب یہ قرآ ن کا معاملہ ہے اور بیت الخلاءمیں ساتھ لے کر جانا اچھا تو ہر گز نہیں ناں! شیخ صاحب نے زچ ہو کر اس سے پوچھا‘ کیا تمہیں بھی کچھ قرآنتمہیں بھی کچھ قرآن مجید یاد ہے؟ سائل نے جواب دیا ‘ جی ہاں شیخ صاحب مجھے کئی سورتیں زبانی یاد ہیں۔ شیخ صاحب نے زچ ہو کر کہا اچھا تو پھر ٹھیک ہے‘ اگلی بار جب تم بیت الخلاءجاﺅ تو اپنے دماغ کو باہر رکھ جانا ۔

انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مین
loading...
اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
خصوصی فیچرز

تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس

صحت